Home  
    Mayor  
    Deputy Mayor  
    Metropolitan Commissioner  
    Departments  
    KMC Directory  
    Photo Gallery  
    Video Gallery  
       
 
 
       
    Tender Information  
    KMC Function  
    Tenders  
    Grand Auctions  
    Section 144 CR.P.C  
    Notifications  
    KMC Resolution  
       
 
 
       
    Public Notice  
    Information  
    National Holidays  
    Prayer Timings  
    Archive  
       


 
 
 
 
     
  بلدیہ عظمیٰ کراچی کے محکمہ کلچر اسپورٹس اینڈ ریکریشن کے زیر اہتمام ماہ ربیع الاول کے حوالے سے المرکز اسلامی میں سیرت النبیﷺ کانفرنس کا انعقاد کیا -  
     
  06-Dec-2017  
     
   
     
  بلدیہ عظمیٰ کراچی کے محکمہ کلچر اسپورٹس اینڈ ریکریشن کے زیر اہتمام ماہ ربیع الاول کے حوالے سے المرکز اسلامی میں سیرت النبی ﷺ کانفرنس کا انعقاد کیا گیا جس کی صدارت معروف عالم دین علامہ اکبر درس نے کی، کانفرنس سے سینیٹر مولانا تنویر الحق تھانوی، رئوف صدیقی، علامہ محسن الزماں نعیمی، علامہ اختر عباس زیدی، ڈاکٹر پروفیسر ساجدہ پروین اور رضوان صدیقی نے خطاب کیا جبکہ قاری حامد محمود قادری، عزیز الدین خاکی، تابندہ لاری، سعدیہ نواب، غزالہ عارف اور ناصر یامین نے نعت رسول ؐ پیش کیں، تقریب میں ممبران صوبائی اسمبلی فیصل سبزواری، جمال احمد، عظیم فاروقی، سٹی کونسل میں پارلیمانی لیڈر اسلم شاہ آفریدی، چیئرمین لینڈ کمیٹی سید ارشد حسن، چیئرمین کلچر کمیٹی اعجاز احمد، چیئرمین قانونی کمیٹی عارف خان ایڈوکیٹ، چیئرمین پارکس کمیٹی خرم فرحان، چیئرپرسن میڈیا مینجمنٹ کمیٹی صبحین غوری، چیئرمین MUCT کمیٹی راحت حسین صدیقی، چیئرمین کچی آبادی کمیٹی سعد اللہ بن جعفر،سینئر ڈائریکٹر کلچر اسپورٹس اینڈ ریکریشن سیف عباس حسنی سمیت دیگر اہم شخصیات نے بڑی تعداد میں شرکت کی، معروف عالم دین علامہ اکبر درس نے اپنے خطاب میں میئر کراچی وسیم اختر کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ ان کی ذاتی دلچسپی اور توجہ کے باعث المرکز اسلامی کو اس کی اصل حیثیت میں نہ صرف یہ کہ بحال کیا گیا بلکہ ماہ ربیع الاول کے مقدس مہینے میں سیرت النبی ﷺ جیسے پروگرام کے انعقاد سے المرکز اسلامی کو دوبارہ فعال کیا جارہا ہے جو خوش آئند ہے، انہوں نے اپنے خطاب میں کہا کہ حضور ﷺکی زندگی میں بہترین نمونہ عمل موجود ہے، حیات طیبہ پر عمل کرکے ہی ہم دنیا و آخرت میں سربلندی حاصل کرسکتے ہیں ،انہوں نے کہا کہ حضور ﷺہر انسان کے لئے پیغام نجات لے کر آئے اور بنی نوع انسان کے لئے رحمت بن کر آئے انہوں نے کہا کہ دین اسلام کی تعلیمات میں سب سے زیادہ زور حقوق العباد پر دیا گیا ہے لہٰذا ہمیں ایک دوسرے کی مدد اور ایک دوسرے کے ساتھ تعاون کرنے کو خود پر لازم کرلینا چاہئے تاکہ اللہ کی مخلوق کی بھلائی کا سوچنے اور ان کے ساتھ پر بھلائی کرنے پر ہم روز محشر بخش دیئے جائیں، سینٹر مولانا تنویرالحق تھانوی نے کہا کہ سیرت النبی ﷺجیسی محافل میں آنے والے ایک قدم بھی آجائیں تو آپ محروم نہیں رہیں گے انہوں نے کہا کہ حضور ﷺنے فرمایا کہ ’’مومن اپنے مومن بھائی کے لئے آئینہ کی مانند ہے اس میں کوئی خامی دیکھے تو دور کرے‘‘۔ انہوں نے کہا کہ جس طرح آئینہ ہمیں ہماری اصل صورت یا ظاہر بتاتا ہے مومن پر بھی یہ لازم ہے کہ وہ اپنے دوسرے مومن بھائی کو صحیح اور درست بات بتائے اور غلط بیانی سے ہر طرح بچے، انہوں نے کہا کہ مومن جب کسی کی اصلاح کرے تو اس انداز میں کہ جس کی اصلاح کی جا رہی ہے وہ دوسروں کے سامنے رسوا نہ ہو اس کی عزت بھی محفوظ رہے اور علیحدگی میں اسے صحیح اور درست بات بتا کر اس کی اصلاح بھی کردی جائے، سابق صوبائی وزیر اور ممبر صوبائی اسمبلی رئوف صدیقی نے کہا کہ ایسی محافل فرش پر ہوتی ہیں اور عرش پر رقم ہوتی ہیں، انہوں نے کہا کہ ہمیں اللہ تعالیٰ نے امت محمد ؐ میں پیدا کیا ہے یہ اللہ تعالیٰ کا ہم پر بہت بڑا انعام ہے، ہم انسان مختلف برائیوں میں گھرے ہوئے ہیں یہاں تک کہ زمانہ جاہلیت کی رسم یعنی لڑکیوں کو زندہ مار دینا اب بھی باقی ہے، انہوں نے کہا کہ بیٹی اللہ کی رحمت ہے اور جس شخص نے اپنی بیٹوں کو اچھی تربیت دے کر اچھی جگہ نکاح کیا وہ روز محشر حضور ﷺ کے قریب ہوگا اور ان کی شفاعت پائے گا، انہوں نے کہا کہ بیٹیاں والدین کے لئے بخشش کا ذریعہ ہیں ہمیں ہر اس بات کی جانب بڑھنا ہوگا جو محبت ، اپنائیت، خلوص اور انسان دوستی کی طرف جاتی ہو اور ہر اس بات سے بچنا ہوگا جو نفرت اور علیحدگی کی طرف جاتی ہو، علامہ محسن الزماں نعیمی نے کہا کہ کردار سے دین بنتا ہے ہمیں اپنے کردار کو بہتر بنانا ہوگا،علامہ اختر عباس زیدی نے کہا کہ سلام ہے اس ذات پر جس نے اپنی محبت اور کردار سے وحشی کو انسان ، انسان کو مسلمان اور مسلمان کو باکردار بنا دیا انہوں نے کہا کہ اللہ پاک نے قرآن پاک سے قبل بھی کتابیں اتاریں مگر وہ صرف کتابیں تھیں مگر قرآن پاک کو معجزہ بنا کر پیش کیا اور اسی قرآن پاک کی تعلیمات پر عمل ہم سب کے لئے ذریعہ نجات ہے، ڈاکٹر پروفیسر ساجدہ پروین نے کہا کہ اللہ تعالیٰ رب العالمین ہے اور جب اس سے اپنا خاص بندہ پیدا کیا تو اسے رحمت العالمین بنا دیا، اندھیرے کو دور کرنے کے لئے نور مجسم ﷺ تشریف لائے ، آپ ﷺکی آمد سے اس اندھیری دنیا میں نور ہی نور بکھر گیا، رضوان صدیقی نے کہا کہ آپ ﷺوجہ تخلیق کائنات ہیں، انہوں نے کہا کہ دین امن ہے ، محبت ہے، انسان دوستی ہے اور ایک دوسرے کے ساتھ تعاون اور مدد کا نام ہے ۔  
     
     
   
     
     

 

 

 

 

 
 
     
 

Copyright © 2011-2012 Karachi Metropolitan Corporation. All rights reserved.
The KMC will not be responsible for the content of external internet sites. / Login  / Webmail  / Webmail 2  / 1339 Executive Dashboard