Home  
    Mayor  
    Deputy Mayor  
    Metropolitan Commissioner  
    Departments  
    KMC Directory  
    Photo Gallery  
    Video Gallery  
       
 
 
       
    Tender Information  
    KMC Function  
    Tenders  
    Grand Auctions  
    Section 144 CR.P.C  
    Notifications  
    KMC Resolution  
       
 
 
       
    Public Notice  
    Information  
    National Holidays  
    Prayer Timings  
    Archive  
       


 
 
 
 
     
  میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سید سیف الرحمن نے کہا ہے کہ بلدیہ عظمیٰ کراچی کے تمام محکموں، اسپتالوں اور باغات میں سگریٹ نوشی پر پہلے ہی سے پابندی عائد ہے  
     
  15-May-2019  
     
   
     
  میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سید سیف الرحمن نے کہا ہے کہ بلدیہ عظمیٰ کراچی کے تمام محکموں، اسپتالوں اور باغات میں سگریٹ نوشی پر پہلے ہی سے پابندی عائد ہے، ضرورت اس امر کی ہے کہ سگریٹ نوشی کے استعمال اور اس کے نقصانات سے بچنے کے لئے بھرپور آگاہی مہم شروع کی جائے، بلدیہ عظمیٰ کراچی ان تمام اداروں کے ساتھ مکمل تعاون کرے گی جو مختلف سماجی برائیوں بالخصوص تمباکو نوشی کے خلاف برسرپیکار ہیں، بلدیہ عظمیٰ کراچی سماجی برائیوں کے خلاف عوام میں شعور اور آگاہی پیدا کرنے کا عزم رکھتی ہے تاکہ بالخصوص وہ بچے جو کم عمری ہی سے تمباکو کے استعمال کی جانب راغب ہوجاتے ہیں انہیں اس بری عادت کی طرف جانے سے روکا جاسکے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کی دوپہر اپنے دفتر میں ملاقات کے لئے آنے والے ’’سوسائٹی فار دی پروٹیکشن آف دی رائیٹس آف دی چائلڈ ‘‘ (SPARC)کے وفد سے ملاقات کرتے ہوئے کیا، وفد میں SPARC کی پروجیکٹ انچارج سعدیہ شکیل اور میڈیا آفیسر کاشف مرزا اور دیگر شامل تھے، اس موقع پر چیئرپرسن میڈیکل اینڈ ہیلتھ کمیٹی ناہید فاطمہ ، سینئر ڈائریکٹر میڈیکل اینڈ ہیلتھ سروسز ڈاکٹر بیربل گینانی اور دیگر بھی موجود تھے، وفد نے اپنی این جی او کی جانب سے اب تک کی جانے والی کوششوں سے متعلق میٹروپولیٹن کمشنر کو آگاہ کیا اور بتایا کہ (SPARC)کا قیام 1992 ء میں اسلام آباد میں ہوا اور اب یہ ملک کے مختلف شہروں میں سماجی برائیوں کے خلاف برسرپیکار ہے، انہوں نے بتایا کہ ہم سول سوسائٹی کے ساتھ مل کر کام کررہے ہیں تاکہ نوجوانوں میں سگریٹ نوشی کی عادت کی حوصلہ شکنی کی جاسکے، صحت مند طرز زندگی کے لئے بچوں کو سگریٹ فروخت کرنے کے خلاف قوانین موجود ہیں ، SPARC کی پروجیکٹ انچارج سعدیہ شکیل نے کراچی میں پروجیکٹ کی تفصیلات اور حقائق کے متعلق بتاتے ہوئے کہا کہ ہماری توجہ کا مرکز جو بنیادی اہم مقاصد ہیںان میں تمباکو سے پاک کراچی کے لئے بذریعہ سیاسی اور بیوروکریسی کا تعاون ،تمباکو کی مارکیٹنگ کے طریقوں پر ابتدائی معلومات اکھٹا کرنا اور انہیں نشاندہی کردہ جگہوں پر استعمال کرنا اورکراچی میں تمباکو نوشی کے خلاف اتحاد بنانا شامل ہیں، میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سید سیف الرحمن نے (SPARC)کی کوششوں کو سراہتے ہوئے کہا کہ ماہ رمضان کے بعد کراچی کے اہم مقامات اور چوراہوں پر سگریٹ نوشی سے نقصانات اور بالخصوص بچوں کو اس جانب جانے سے روکنے کے لئے بلدیہ عظمیٰ کراچی مل کر کام کرے گی اور اس بات کی کوشش کی جائے گی کہ میڈیا کے ذریعے شعور اور آگاہی کا عمل دور دور تک پہنچے اور لوگ خود بھی بچیں اور بچوں کو سگریٹ نوشی کی طرف نہ جانے دیں، وفد نے بتایا کہ گلوبل یوتھ ٹوبیکو سروے کے مطابق اس وقت 13.3 فیصد لڑکے اور 6.6 فیصد لڑکیاں (جن کی عمریں 13 سے 15 سال ہیں) تمباکو کا استعمال کرتے ہیں، تقریباً 160,000 افراد پاکستان میں ہر سال تمباکو نوشی سے ملحقہ بیماریوں کی وجہ سے مرجاتے ہیں جبکہ دوسرے لوگوں کی سگریٹ نوشی کی وجہ سے تقریباً 40,000 افراد ہلاک ہوتے ہیں ۔وفد نے تمباکو اور تمباکو نوشی کی ممانعت اور تمباکو نوشی نہ کرنے والے افراد کے تحفظ سے متعلق آرڈیننس 2002 پر حقائق فراہم کئے جس میں ایسے اقدامات شامل ہیں جن میں تمباکو نوشی میں مبتلا افراد کو عوامی مقامات پر تمباکونوشی کی ممانعت، تعلیمی اداروں میں تمباکو کی مصنوعات کی رسائی اور 18 سال سے کم عمر افراد پر سگریٹ فروخت کرنے پر پابندی عائد کی گئی ہے۔  
     
     
   
     
     

 

 

 

 

 
 
     
 

Copyright © 2011-2012 Karachi Metropolitan Corporation. All rights reserved.
The KMC will not be responsible for the content of external internet sites. / Login  / Webmail  / Webmail 2  / 1339 Executive Dashboard